فروشگاه اینترنتی هندیا بوتیک
آج: Saturday, 19 September 2020

www.Ishraaq.in (The world wide of Islamic philosophy and sciences)

وَأَشۡرَقَتِ ٱلۡأَرۡضُ بِنُورِ رَبِّهَا

 

س۷۲۲۔ بڑے شھروں میں قصدوطن اور قصد اقامت کے شرائط کے بارے میں آپ کا کیا نظریہ ھے؟

ج۔ بڑے اور مشھور شھروں میں، احکام مسافر، قصدوطن اور دس روز قیام کے اعتبار سے کوئی فرق نھیں ھے بلکہ بڑے شھر میں کسی مخصوص محلہ کے تعیین کے بغیر قصد وطن کرنے

 

س۷۱۸۔ کیا وطن اور اقامت کے بارے میں زوجہ شوھر کی تابع ھے؟

ج۔ صرف زوجیت قھری طور پر شوھر کے تابع ھونے کی موجب نھیں ھے بلکہ زوجہ کو یہ حق حاصل ھے کہ قصد اقامت اور وطن اختیار کرنے میں شوھر کا اتباع نہ کرے،ھاں اگر زوجہ اپنے ارادہ

 

س۶۹۳۔ جب انسان یہ جانتا ھے کہ وہ جس سفر پر جارھا ھے اس میں گناہ و حرام میں مبتلا ھوگا تو اس کی نماز قصر ھے یا نھیں؟

 

س۶۹۶۔ میری جائے پیدائش تھران ھے جبکہ میرے والدین کا وطن ” مھدی شھر “ ھے ۔ لھذا وہ سال میں متعدد بار ” مھدی شھر“ جاتے ھیں ان کے ساتھ میں بھی سفر کرتا ھوں ۔

 

س۶۸۸۔ جرمنی اور یورپ کے بعض شھروں کا درمیانی فاصلہ ایک سو میٹر سے زیادہ نھیں ھوتا اور دونوں شھروں کے مکانات اور راستے ایک دوسرے سے متصل ھوتے ھیں، ایسے موارد میں حد ترخص کھاں سے شروع ھوتی ھے؟